Education (Taaleem) Article by Roha Sadia

کالم

تعلیم

روحا سعدیہ

تعلیم ایک ایسا تحفہ ھے جو کبھی نقصان دہ نہیں ہو سکتا۔میں یہ نہیں کہتی کہ بچوں اور بچیوں کو صرف معاشرتی تعلیم دلوائی جائے۔نہیں
بچوں کے لیے جہاں معاشرتی تعلیم ضروری ہے وہاں دینی تعلیم بھی بہت ضروری ہے اور اس کا حکم اللّٰہ تعالیٰ نے خود محمد ص کے ذریعے دیا ہے۔
علم کی طلب تو ہر مسلمان پر فرض ہے پھر چاھے وہ عورت ہو یا مرد۔ اور بچوں،بچییوں کے لئے معاشرتی اور دینی تعلیم، دونوں ہی بہت اہم ہیں۔
اور پھر حضرت محمد ص نے فرمایا ہے کہ
“علم حاصل کرو خواہ تمہیں اس کے لئے چین جانا پڑے”
اور  اللّٰہ تعالیٰ کا فرمان ہے کہ
“کیا جاننےوالے اور نا جاننے والے برابر ہو سکتے ہیں”

تعلیم انسان کو عزت کرنا سکھاتی ہے، اچھے برے میں فرق کرنا سکھاتی ہے اور پھر قرآن مجید میں تو مکمل زندگی گزارنے کا طریقہ بتایا گیا ہے،
“قرآن مجید مکمل ضابطہ حیات ہے”
مانتی ہوں کہ آج کے دور میں والدین کے پاس اتنے وسائل نہیں ہیں کہ وہ اپنے بچوں کو اعلیٰ تعلیم دلوا سکیں لیکن آ سانی ہمیشہ مشکل کے بعد آ تی ہے۔
ضروری نہیں کہ تعلیم کچھ بننے کے لئے ہی حاصل کی جائے۔ ایک اچھا انسان تب ہی بنا جا سکتا ہے جب انسان کے پاس تعلیم جیسا قیمتی ہنر ہوگا۔
تعلیم جہالت کو ختم کرتی ہے، تعلیم سے حاصل ہونے والی تربیت سے ایک انسان اپنی آ ئیندہ نسل کو مزید بہتر اور کامیاب بنا سکتا ہے اور اس تربیت میں والدین سب سے اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔
حضرت محمد ص نے فرمایا،
“جو شخص اپنی اولاد کو قرآن کی تعلیم دے ، اللّٰہ تعالیٰ قیامت کے دن اس کے والدین کو عزت کا تاج پہنائیں گے اور جنت کا وہ لباس عطا فرمائے گا جس کو کبھی کسی نے نہ دیکھا ہو گا۔”
میں والدین سے درخواست کرنا چاھتی ھوں کہ اپنے بچوں اور بچیوں کو معاشرتی اور دینی دونوں طرح کی تعلیم حاصل کروائیں۔ بچیوں کے لئے تعلیم بہت اہم ہے، آ ج کے دور میں میٹرک یا انٹر کو کوئی خاص اہمیت نہیں دی جاتی، والدین سے گزارش ہے کہ اگر آپ کے پاس اتنے وسائل نہیں ہیں تو پلیز بچییوں کو کوئی ہنر سکھا دیا کریں جس سے وہ اپنی زندگی سنوار سکیں اور مزید تعلیم حاصل کر سکیں جو بچییوں کے لیے بہت اہم ثابت ہو گی۔
حدیثِ مبارکہ میں ہے کہ حضرت ابو ہریرہ فرماتے ہیں کہ رسول اللہ ص یہ دعا مانگا کرتے تھے۔
“اے اللہ جو علم آ پنے مجھے عطا فرمایا اس سے نفع بھی دیجئے اور مجھے (مزید) ایسے علوم سے نواز دیجیے جو میرے لئے نافع اور مفید ہوں اور میرے علم میں خوب اضافہ فرما دیجیئے اور ہر حال میں تمام تعریفیں آپ ہی کے لئے ہیں۔

٭٭٭٭٭٭

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*